Tees maar khan

جو خود کو تیس مار خاں سمجھتے ہیں ان کے لیے

اگر آپ اچھا رزق کما رہے ہیں تو یقین جانیں اس میں آپ کی ذہانت یا صلاحیتوں کا کوئی کمال نہیں، بڑے بڑے عقل کے پہاڑ خاک چھان رہے ہیں۔

اگر آپ کسی بڑی بیماری سے بچے ہوئے ہیں تو اس میں آپ کی خوراک یا حفظانِ صحت کی اختیار کردہ احتیاطی تدابیر کا کوئی دخل نہیں۔ ایسے بہت سے انسانوں سے قبرستان بھرے ہوئے ہیں جو سوائے منرل واٹر کے کوئی پانی نہیں پیتے تھے مگر پھر اچانک انہیں برین ٹیومر، بلڈ کینسر یا ہیپاٹائٹس سی تشخیص ہوئی اور وہ چند دنوں یا لمحوں میں دنیا سے کوچ کر گئے۔

اگر آپ کے بیوی بچے سرکش نہیں بلکہ آپ کے تابع دار و فرمانبردار ہیں، خاندان میں بیٹے بیٹیاں مہذب، باحیا و با کردار سمجھے جاتے ہیں، تو اس کا سب کریڈٹ بھی آپ کی تربیت کو نہیں جاتا کیوں کہ بیٹا تو نبی کا بھی بگڑ سکتا ہے اور بیوی تو پیغمبر کی بھی نافرمان ہو سکتی ہے۔

اگر آپ کی کبھی جیب نہیں کٹی، کبھی موبائل نہیں چھنا تو اس کا یہ مطلب نہیں کہ آپ بہت چوکنّے اور ہوشیار ہیں، بلکہ اس سے یہ ثابت ہوا کہ اللہ نے بدقماشوں، جیب کتروں اور رہزنوں کو آپ کے قریب نہیں پھٹکنے دیا تاکہ آپ ان کی ضرر رسانیوں سے بچے رہیں۔
:
الحمدللّٰہ مجھے مذکورہ بالا تمام نعمتیں میسر ہیں سوائے اس کے کہ ایک بار حیدرآباد میں ایک تھکا ہوا نوکیا موبائل جیب سے نکل گیا وہ بھی اس لیے کہ میرے ایک عزیز کا موبائل نکل جانے پر میرے دل میں یہ خیال آیا کہ لوگ کیسے مست و مدھوش ہو کر چلتے ہیں کہ کوئی ان کی جیب سے موبائل لے اڑے، انہیں پتہ تک نہیں چلتا۔ بس اگلے ہی دن میرے ساتھ بھی ایسا ہی ہوگیا۔ من میں جھانکا تو اندر سے صدا آئی: اے ڈیڑھ ہوشیار! جب تقدیر کا لکھا سامنے آ جائے تو عقل کی چڑیا پرواز کر جایا کرتی ہے۔

یہ غالباً ہر انسان کی فطرت ہے کہ جب وہ خود دوسروں سے اچھا کما رہا ہو تو یہ سوچنا شروع کر دیتا ہے کہ وہ ضرور دوسروں سے زیادہ محنتی، چالاک اور منضبط (organised) ہے اور اپنے کام میں زیادہ ماہر ہے۔ پھر وہ ان لوگوں کو حقیر سمجھنا شروع کر دیتا ہے جن کو نپا تلا رزق مل رہا ہے، ان پر تنقید کرتا ہے، ان کا مذاق اڑاتا ہے۔ مگر جب یکلخت وقت کا پہیہ الٹا گھومتا ہے تو اس کو پتہ چل جاتا ہے کہ حقیقت اس کے برعکس تھی جو وہ سمجھ بیٹھا تھا۔

دبئی میں ایک صاحب سے واسطہ پڑا۔ پہلے مجبور و پریشان تھے، پھر کنسٹرکشن کی کمپنی کھول لی۔ پر شکوہ آفس بنایا، سمجھیں کہ لاکھوں میں کھیلنے لگے۔ ملاقات کے لیے گیا تو ایک مشترک دوست کے بارے میں پوچھا، جو بیچارے مفلوک الحال رہا کرتے تھے۔ پھر کہنے لگے، وہ تو بڑے کم عقل انسان ہیں، ساری زندگی یوں ہی عسرت میں گزار دی۔ یہ کام کر لیتے وہ کام کر لیتے، وغیرہ وغیرہ۔
کوئی دس بارہ سال کا وقفہ آگیا، ہماری ملاقات نہ ہوئی۔ پھر ایک دن کسی کام سے ان کے آفس جانا ہوا۔ خود نہیں تھے بلکہ پورا اسٹاف ہی بدلا نظر آیا۔ میں نے موصوف کا نام لے کر پوچھا کہ کہاں گئے، پہلے تو یہ ان کا آفس تھا؟ بتایا گیا، مرحوم ہو چکے۔ پھر تفصیل بتائی جو کچھ یوں تھی کہ کاروبار میں نقصان ہونے کی وجہ سے پیچھے ہوتے چلے گئے پھر مقروض اور نادہندہ بن کر جیل پنہچ گئے۔ چیک باؤنس کیس میں سزا ہوئی اور اُسی سزا کے دوران جیل ہی میں انتقال کر گئے، اس حال میں کہ فیملی پاکستان میں تھی، نہ کوئی عزیز قریب  تھا نہ کوئی فیملی میمبر۔

یہ خبر سنتے ہی میرے سامنے دس سال قبل کا اسی کمرے کا منظر گھوم گیا جہاں گول گھومتی کرسی پر بیٹھ کر مرحوم ایک سادا اور خدا مست درویش کی مالی ابتری کا مذاق اڑا رہے تھے۔ بادشاہ کو فقیر بنتے دیر نہیں لگتی، سن رکھا تھا مگر بچشمِ خود دیکھا اس دن تھا۔

اگر کوئی چاہتا ہے کہ اسے رزق کے معاملہ میں آزمایا نہ جائے تو تین کام کرے:

اوّل: جو کچھ مل رہا ہے اسے محض مالک کی عطا سمجھے نہ کہ اپنی قابلیت کا نتیجہ اور ساتھ ہی مالک کا شکر بھی بجا لاتا رہے۔

دوئم: جن کو کم یا نپاتلا رزق مل رہا ہے انہیں حقیر نہ جانے نہ ان لوگوں سے حسدکرے جن کو "چھپر پھاڑ" رزق میسر ہے۔ یہ سب رزّاق کی اپنی تقسیم ہے۔ اس کے بھید وہی جانے۔

سوئم: جتنا ہو سکے اپنے رزق میں دوسروں کو شامل کرے۔ زیادہ ہے تو زیادہ، کم ہے تو کم شامل کرے۔ سب سے زیادہ حق، والدین اور رحم کے رشتوں کا ہے۔ نانا نانی، دادا دادی، بہنیں اور بھائی ہیں۔ اس کے بعد خون کے دوسرے رشتے ہیں جیسے خالہ، پھوپھی، چچا، ماموں، چچی وغیرہ۔ پھر دوسرے قریبی رشتہ دار یا مسکین و لاچار لوگ۔ یقین رکھیں کہ جب بہت سے دعا کے ہاتھ اس کے حق میں اٹھیں گے تو برکت موصلہ دھار بارش کی مانند برسے گی جس کی ٹھنڈی پھوار اس کی زندگی کو گلشن گلشن بنا  دے گ

Khana bolna sona

بہلول نے حضرت جنيد بغدادی سےپوچھا شیخ صاحب کھانے کے آداب جانتے ہیں؟
کہنے لگے، بسم اللہ کہنا، اپنے سامنے سے کھانا، لقمہ چھوٹا لینا، سیدھے ہاتھ سے کھانا، خوب چبا کر کھانا، دوسرے کے لقمہ پر نظر نہ کرنا، اللہ کا ذکر کرنا، الحمدللہ کہنا، اول و آخر ہاتھ دھونا۔
بہلول نے کہا، لوگوں کے مرشد ہو اور کھانے کے آداب نہیں جانتے اپنے دامن کو جھاڑا اور وہا ں سے اٹھ کر آگے چل دیئے۔
شیخ صاحب بھی پیچھے چل دیئے، مریدوں نے اصرار کیا، سرکار وہ دیوانہ ہے لیکن شیخ صاحب پھر وہاں پہنچے پھر سلام کیا۔
بہلول نے سلام کا جواب دیا اور پھر پوچھا کون ہو؟ کہا جنید بغدادی جو کھانے کے آداب نہیں جانتا۔ بہلول نے پوچھا اچھا بولنے کے آداب تو جانتے ہوں گے۔
جی الحمدللہ، متکلم مخاطب کے مطابق بولے، بےموقعہ، بے محل اور بےحساب نہ بولے، ظاہر و باطن کا خیال رکھے۔ بہلول نے کہا کھانا تو کھانا، آپ بولنے کے آداب بھی نہیں جانتے، بہلول نے پھر دامن جھاڑا اورتھوڑا سا اور آگے چل کر بیٹھ گئے۔
شیخ صاحب پھر وہاں جا پہنچے سلام کیا۔
بہلول نے سلام کا جواب دیا، پھر وہی سوال کیا کون ہو؟
شیخ صاحب نے کہا، جنید بغدادی جو کھانے اور بولنے کے آداب نہیں جانتا۔ بہلول نے اچھا سونے کے آداب ہی بتا دیں؟
کہا نماز عشاء کے بعد، ذکر و تسبیح، سورہ اور وہ سارے آداب بتا دیئے جو روایات میں ذکر ہوئے ہیں۔ بہلول نے کہا آپ یہ بھی نہیں جانتے، اٹھ کر آگے چلنا ہی چاہتے تھے کہ شیخ صاحب نے دامن پکڑ لیا اور کہا جب میں نہیں جانتا تو بتانا آپ پر واجب ہے۔
بہلول نے کہا جو آداب آپ بتا رہے ہيں وہ فرع ہیں اور اصل کچھ اور ہے، اصل یہ ہے کہ جو کھا رہے ہیں وہ حلال ہے یا حرام، لقمہ حرام کو جتنا بھی آداب سے کھاؤ گے وہ دل میں تاریکی ہی لائےگا نور و ہدایت نہیں، شیخ صاحب نے کہا جزاک اللہ۔
بہلول نے کہا کلام میں اصل یہ ہے کہ جو بولو اللہ کی رضا و خوشنودی کیلئے بولو اگر کسی دنیاوی غرض کیلئے بولو گے یا بیھودہ بول بولو گے تو وہ وبال جان بن جائے گا۔
سونے میں اصل یہ ہے کہ دیکھو دل میں کسی مؤمن یا مسلمان کا بغض لیکر یا حسد و کینہ لیکر تو نہیں سو رہے، دنیا کی محبت، مال کی فکر میں تو نہیں سو رہے،کسی کا حق گردن پر لیکر تو نہيں سو رہے...

Taqva

۔         _________محبت کے مستحق __________
    
      حضرت معاذ سواری پر ہیں اور رسول اللہ صلی اللہ علیہ و سلم ان کے ساتھ ساتھ پیدل چل رہے ہیں _ حضرت معاذ بے قرار ہوکر عرض کرتے ہیں :
"اے اللہ کے رسول! میں اتر جاؤں؟" مگر آپ ص فرماتے ہیں : " نہیں، بیٹھے رہو _" آپ ص برابر انھیں مختلف ہدایات دے رہے ہیں _جب فارغ ہوئے تو کچھ دیر خاموش رہے ، پھر فرمایا : " اے معاذ ! شاید اگلے سال تم سے ملاقات نہ ہو _ تم واپس آؤ تو تمھارا گزر میری مسجد اور میری قبر کے درمیان سے ہو _"
یہ سننا تھا کہ حضرت معاذ دہاڑیں مار مار کر رونے لگے _  اللہ کے رسول صلی اللہ علیہ و سلم نے اپنا چہرہ مبارک ان کی طرف سے پھیرا  اور مدینہ کی طرف کرکے فرمایا :
         " إِنَّ أَوْلَى النَّاسِ بِي الْمُتَّقُونَ، مَنْ كَانُوا وَحَيْثُ كَانُوا ".
(مسند أحمد :22052 )
  
    " مجھ کو سب سے زیادہ محبوب وہ لوگ ہیں جو تقوی کی روش پر گام زن ہوں _ وہ چاہے جو ہوں اور چاہے جہاں کے ہوں _"
     
      اس حدیث میں بہت صاف اور دو ٹوک الفاظ میں اللہ کے رسول صلی اللہ علیہ و سلم نے اپنی محبت اور قربت  حاصل کرنے کا طریقہ بتایا ہے _
       تقوی کیا ہے ؟ تقوی کسی ظاہری ہیئت کا نام نہیں ، بلکہ دل کی کیفیت کا نام ہے _تقوی یہ ہے کہ انسان ہر وقت اللہ اور اس کے رسول کی رضا کو اپنے پیش نظر رکھے _ وہ کام انجام دینے کی کوشش کرے جن کا انھوں نے حکم دیا ہے _ ان کی ناراضی اور غضب سے بچے اور ان کاموں کے ارتکاب سے حتی الامکان خود کو بچائے جن سے انھوں نے روکا ہے _
        اس حدیث میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ اس فضیلت کو کوئی بھی انسان حاصل کرسکتا ہے _  وہ کسی بھی سماجی حیثیت کا مالک ہو ، کسی بھی خطے اور علاقے کا رہنے والا ہو ، کسی رنگ و نسل کا ہو -
وہ اپنے اندر تقوی کی صفت پیدا کرلے ، اسے اللہ کے رسول صلی اللہ علیہ و کی قربت اور محبت حاصل ہو جائے گی اور جسے اللہ کے رسول کی محبت حاصل ہوجائے اسے اللہ تعالی بھی اپنا محبوب بنالے گا __!!

Check yourself against these qualities


SOME OF THE HUMAN QUALITIES ALLAH, THE ALMIGHTY LOVES

"Say (O Muhammad to mankind): "If you (really) love Allah, then follow me (i.e. accept Islamic monotheism, follow the Quran and the Sunnah), Allah will love you and forgive you your sins. And Allah is Oft-Forgiving, Most Merciful."
(Quran: 3:31)

Ø        Patience
Ø        Justice and Dealing with Equity
Ø        Putting Trust in Allah
Ø        Perfection of One's Work
Ø        Rescuing
Ø        Being Kind and Gentle to Others
Ø        Kindliness
Ø        Repentance
Ø        Piety
Ø        Good-doing
Ø        Body Purification
Ø        Humility of the Rich
Ø        Belief and Work
Ø        Reflection of Allah's Grace
Ø        Magnanimity
Ø        Virtuosity
Ø        Loftiness
Ø        Justice
Ø        Strength
Ø        Love for the Sake of Allah
Ø        Forgiveness
Ø        Continuous Performance of Righteous Deeds
Ø        Loving and Visiting Believers
Ø        Exhortation and Advising
Ø        Love of Virtuous Deeds
Ø        Good Manners and Conduct


All above titles are explained by a Hadees below:-

Patience
"And Allah loves as-Sabirun (the patient)."
(Quran: 3:146)

Justice and Dealing with Equity
"Be just: that is nearer to piety; and fear Allah."
(Quran: 5:8)

Putting Trust in Allah
"Certainly, Allah loves those who put their trust (in Him)."
(Quran: 3:159)

Perfection of One's Work
The Messenger (peace be upon him) said: "Allah loves that if one does a job he perfects it."

Rescuing
Abu Ya 'la Dailami and Ibn Asakir narrated: Abu Hurairah and Anas Ibn Malik said: Allah's Messenger (peace be upon him) said: "Allah loves rescuing the one who needs rescue."

Being Kind and Gentle to Others
Baihaqani narrated: Allah's Messenger (peace be upon him) said: "Allah is kind and gentle (to others)."

Kindliness
"Aisha narrated: The Messenger of Allah (peace be upon him) said: "Allah loves kindliness in all matters."
(Bukhari)

Repentance
"Truly, Allah loves those who turn unto him in repentance."
(Quran: 2:222)

Piety
"Verily, then Allah loves those who are al-Muttaqun (the pious)."
(Quran: 3:76)

Good-doing
"Truly, Allah loves Al-Muhsinun (the good-doers)."
(Quran: 2:195)

Body Purification
"And Allah loves those who make themselves clean and pure [ i.e. who clean their private parts with dust (which has the properties of soap) and water from urine and stools, after answering the call of nature]."
(Quran: 9:108)

Humility of the Rich
Muslim narrated: Sa'd Ibn Abi Waqqas said: Allah's Messenger (peace be upon him) said: "Allah loves the believer who is pious and rich, but does not show off."

Belief and Work
Al-Tabarani narrated: Allah's Messenger (peace be upon him) said: "Allah loves the slave who believes and acquires a career (or work)."

Reflection of Allah's Grace
Al-Tirmidhi narrated: Allah's Messenger (peace be upon him) said: "Allah loves from amongst his slaves, the one who has a sense of zeal or honor."

Magnanimity
Al-Hakim narrated: The Messenger of Allah (peace be upon him) said: "Allah is All-Generous and He loves generosity in sale, purchase and judgment."

Virtuosity
The Messenger of Allah (peace be upon him) said: "Allah loves the slave-believer who is poor but virtuous enough to refrain from begging though he has many children."
(Muslim and Ahmed)

Loftiness
Al-Tabarani narrated: the Messenger of Allah (peace be upon him) said: "Allah loves lofty matters and superiority and hates inferior matters."

Justice
Allah's Messenger (peace be upon him) said: "Allah loves that you be just toward your children even when kissing them."
(Ibn Al-Najjar)

Strength
Muslim narrated: Allah's Messenger (peace be upon him) said: "The strong believer is better and more loved by Allah than the weak one, but they are both good."

Love for the Sake of Allah
Al-Tabarani, Ibn Ya'la, Ibn Hibban and Al-Hakim narrated: Allah's Messenger (peace be upon him) said: "If two men love each other for the sake of Allah, the stronger in love to his brother will be more loved by Allah."

Forgiveness
Ibn Iday narrated: Allah's Messenger (peace be upon him) said: "Allah is All-Forgiving and He loves forgiveness."

Continuous Performance of Righteous Deeds
Bukhari and Muslim narrated: Allah's Messenger (peace be upon him) said: "The best loved deeds to Allah are the ones that are continuous even if they are not very many."

Loving and Visiting Believers
Malik narrated: Allah's Messenger (peace be upon him) said: "Allah said: My love is due to those who meet for My sake, visit one another and make any effort for My pleasure."

Exhortation and Advising
Abdullah, the son of Imam Ahmed narrated: It was said: Allah's Messenger (peace be upon him) said: "The best loved slaves to Allah are those who exhort their slaves."

Love of Virtuous Deeds
Ibn Abi Al-Dunya narrated: Allah's Messenger (peace be upon him) said: "The best loved slaves to Allah are those who are made to love virtue and loving virtuous deeds is made lovely to them."

Good Manners and Conduct
Al-Tirmidhi narrated: Allah's Messenger (peace be upon him) said: "The best loved by me and the nearest to me on the seats on the Day of Resurrection are those who have the best manners and conduct amongst you, who are intimate, are on good terms with others and are humble, and the most hated by me and who will be on the furthest seats from me are those who are talkative and arrogant."

Love of Allah is the basis of worship that should be directed to Him alone. Any other love should be for His sake too. The real love of Allah is to do whatever He ordained and to abandon whatever He forbade, in addition to following the Prophet's Sunnah.

Whoever obeys someone or something other than Allah and His Messenger, or follows any saying other than theirs, or fears other than Allah or seeks the pleasure of other than Allah, or puts his trust in other than Him, does not love Allah, nor does he love His Messenger. Muslims should also love one another and wish the best for one another. Allah's Messenger (peace be upon him) said:

"One will not be a true believer unless he loves for his brother what he loves for himself."
(Bukhari, Muslim, Nasa'i, Ahmed and Ibn Majah)

Imam Malik and Imam Ahmed narrated: Allah's Messenger (peace be upon him) said: "Allah said: My love is due to those who love one another for My sake."


What Is Contenment

If one was asked to define contentment, how would one do the same? 
A very simple and easy to understand, definition of contentment, is:

"At the present moment:
* wherever you are is wherever you are meant to be,
* whatever you are doing is whatever you are meant to be doing and
* whatever everyone else is doing is what they are meant to be doing."

To experience constant contentment, we need to become aware of all the things that make us discontent (dissatisfied) and free ourselves from those things (ideas, opinions, objects, people). We don't have to reject them or distance ourselves from them, but a detachment from them, a detachment at the level of the consciousness that will bring back our inner freedom. Detachment is then accompanied by the experience of a deep, inner awareness of satisfaction and stillness, because you stop being dependent on anything or anyone outside ourselves.

It is highly unlikely that we will arrive at this deep state of fulfillment very soon - though we may touch it and experience it temporarily. It is only by understanding and accepting completely that everything is the way it is meant to be at every moment, both outside our minds and inside our minds that we move closer to being content.

Thanks for the Post Shared by DR.BK.Satyanarayan 
 
#Happiness #Stress

*بیوی سے ہمبستری کرنے کا اسلامی طریقہ*

*بیوی سے ہمبستری کرنے کا اسلامی طریقہ*

میاں بیوی کے تعلق سے کچھ ایسے  مسائل ہیں جن کا جاننا  ضروری ہے مگر وہ نہیں جانتے کیوں کہ دینی کتاب ہم پڑھتے نہیں اور عالم دین علمائے اھل سنت سے پوچھنے میں شرم آتی ہے

مگر عجیب بات ہے مسئلہ پوچھنے میں تو ہمیں شرم آتی ہے مگر وہی غیرت اس وقت مر جاتی ہے جب دولہا اپنے دوستوں کو اور دلہن اپنی سہیلیوں  کو پوری رات کی کہانی سناتے ہیں
*استغفراللہ معاذاللہ* 
خیر یہ میسج save  کر کے رکھیں اور اپنے دوستوں اور عزیزوں میں جن کی شادیاں ہوں انہیں تحفے کے طور پر اور علم دین کی سربلندی کے لیے یہ میسج سینڈ کریں

✍ مسئلہ یاد رہے کہ شادی سے پہلے میاں بیوی اور اولاد کے حقوق کے مسائل سیکھنا فرض ہیں

*حضرت سیدنا جنید بغدادی رحمۃ اللہ علیہ فرماتے ہیں*
کہ انسان کو جماع کی ایسی ہی ضرورت ہے جیسے غذا کی کیونکہ بیوی کے طہارت کا سبب ہے

```(احیاء العلوم  جلد 2 ص: 29)```

حدیث پاک میں آتا ہے کہ جس طرح حرام صحبت پر گناہ ہے اسی طرح جائز صحبت پر نیکیاں ہیں
 
```(مسلم جلد 1_ ص : 324)```

جب شوہر اپنی بیوی سے ہمبستری مباشرت کا ارادہ کرے اور بالخصوص شادی کی پہلی رات جسے سہاگ رات بھی کہتے ہیں اور اس کے بعد جب بھی تو شوہر کو چاہیے کہ ان آداب و طریقہ کار کے مطابق عمل کرے ان شاءاللہ شیطان کی دست برد یعنی مداخلت سے محفوظ رہیں گے اور نیک صالح اولاد پیدا ہو گی نماز کے بعد شوہر اپنی دلہن کی پیشانی کے تھوڑے سے بال نرمی اور محبّت سے پکڑ کر یہ دعا پڑھے*  

*(اللھم انی اسئلک خیرھا وخیر ماجبلتھا علیہ واعوذ بک من شرھا وشر ماجبلتھا  علیہ)*

تو نماز اور اس دعا کی برکت سے میاں بیوی کے درمیان محبّت اور الفت قائم ہوگی ان شاء اللّه تعالی

```(ابو داؤد ، ص : 293)```

اور دس 10 مرتبہ *الله اكبر* پڑھے پھر بوس و کنار یعنی چومنا💋 *Kissing* چاہے تو کہے *بسم اللہ العظیم اللہ اکبر اللہ اکبر* اور 
*سورہ اخلاص ایک مرتبہ پوری پڑھے* 

```(خزینہ رحمت صفحہ 134/135 کیمیائے سعادت)```

*چند اہم مسائل* ✍

1⃣ خاص جماع ہمبستری مباشرت کے وقت بات کرنا مکروہ ہے اس سے بچے کے توتلے ہونے کا خطرہ ہے 

2⃣ اسی طرح اس وقت عورت کی شرم گاہ کی طرف نظر کرنے سے بھی بچنا چاہیے کہ بچے کا اندھا ہونے کا امکان ہے

3⃣ یوں ہی بالکل برہنہ ننگے بھی ہمبستری مباشرت صحبت نا کریں ورنہ بچے کے بے حیاء ہونے کا اندیشہ ہے

```(فتاویٰ رضویہ جلد 9 : ص : 46)``` 

اور اہم ٹپ👇
کمرے میں زیرو پاور کے بلب کا اہتمام ضرور کریں اور اگر کپڑے بالکل اتار کر ہمبستری کرنا ہے تو ایک بڑی چادر دوران ہمبستری اپنے اوپر اوڑھ لیں تاکہ پردہ پوشی ہو سکےبالکل ننگے ہو کر ہمبستری کرنا گدھا گدھی کی طرح جفتی کرنا کہلائے گا جو کہ شریعت کے نزدیک ناپسندیدہ عمل ھے

4⃣ ہمبستری کے وقت بسم اللّه شریف پڑھنا سنّت ہے اور یہ دعا پڑھے *اللھم جنبنا الشیطان و جنب الشیطان مارزقتنا*

*مسئلہ*
مگر یاد رہے کی ستر کھولنے سے پہلے پڑھے اور سب سے بہتر ہے کہ جب کمرے میں داخل ہو تب ہی بسم اللّه شریف پڑھ کر دایاں قدم اندر داخل کریں اگر ہمیشہ ایسا کرتا رہے گا تو شیطان کمرے سے باہر ہی ٹھر جائے گا ورنہ وہ بھی آپکے ساتھ شریک ہوگا

```(تفسیر نعیمی جلد 2 ، ص : 410)``` 

5⃣ عورت کے اندر مرد کے مقابلے 100 گناہ زیادہ شہوت ہے مگر اس پر حیاء کو مسلط کر دیا گیا ہے تو اگر مرد جلدی فارغ ہو جائے تو فوراً اپنی بیوی سے جدا نہ ہو بلکہ کچھ دیر ٹھرے پھر الگ ہو

```(فتاویٰ رضویہ ، جلد 9 ، ص 183)```

6⃣جماع کے وقت کسی اور کا تصور کرنا بھی زنا ہے اور سخت گناہ ہے

7⃣ جماع کے لیے کوئی وقت مقرر نہیں ہاں بس اتنا خیال رہے کہ نماز فوت نا ہونے پائے کیونکہ بیوی سے بھی نماز روزہ اعتکاف حیض نفاس اور نماز کے ایسے وقت میں صحبت کرنا کہ نماز کا وقت نکل جائے حرام ہے
 
```(فتاویٰ رضویہ  جلد 1 ص 584)```  

8⃣ مرد کا اپنی عورت کی چھاتی کو منہ لگانا جائز ہے مگر اس طرح کہ دودھ حلق سے نیچے نہ اترے یہ حرام ہے لیکن ایسا ہو بھی گیا تو توبہ کرے مگر اس سے نکاح پر کوئی فرق نہیں آتا

```(در مختار ، جلد 2 ، ص ، 58)```
 
9⃣ مرد و عورت کو ایک دوسرے کا سطر شرم گاہ دیکھنا چھونا جائز ہے مگر حکم یہی ہے کہ مقام مخصوص شرمگاہ کی طرف نا دیکھا جائے کہ اس سے نسیان یعنی حافظہ کمزور ہونے کا مرض ہوتا ہے اور نگاہ بھی کمزور ہو جاتی ہے

```(رد المختار جلد 5 ، ص ، 256)```

1⃣0⃣ہمبستری مباشرت سے فراغت کے بعد مرد و عورت کو الگ الگ کپڑے سے اپنا سطر صاف کرنا چاہیے کیونکہ دونوں کا ایک ہی کپڑا استمعال کرنا نفرت اور جدائی کا سبب ہے

```(کایمیاے سعادت ، ص ، 265)```

آج کل کے جدید دور میں ٹشو کا استعمال نہایت آسان و مفید ہےگھر میں ایک پیکٹ ٹشو کا ضرور رکھیں

1⃣1⃣ہمبستری سے احتلام انزال یعنی منی خارج ہونے کے بعد یا دوسری مرتبہ صحبت کرنا چاہتا ہے تب بھی سطر شرمگاہیں لازمی دھو لیں کچھ وقفہ دے کر اور بہتر یہ ہے کہ وضو کر لیں ورنہ ہونے والے بچے کو بیماری کا خطرہ ہے

```(قبتل قبل ، جلد 2 ، ص ، 489)``` 

1⃣2⃣جماع کے بعد لڑکے کی پیدائش کا ارادہ ہے تو عورت کو فوراً دائیں پہلو کروٹ  لیٹنے کا حکم دیں کہ اگر نطفہ قرار پا گیا تو ان شاء اللّه لڑکا ہی ہوگا
اور اگر لڑکی کی پیدائش کا ارادہ ہے تو عورت کو بائیں پہلو کروٹ کا کہیں اور عورت فوراً بائیں کروٹ لے لے اور کچھ دیر لیٹی رہے تو ان شاءاللہ لڑکی پیدا ہو گی
اور اگر اولاد کے حصول کا ارادہ نہیں تو مباشرت میں انزال کے فورا بعد عورت سیدھی کھڑی ہو جائے

```(مجربات یوسف ، ص 42)```

1⃣3⃣جماع مباشرت ہمبستری کے کچھ دیر بعد مثلاً کم از کم آدھا گھنٹہ بعد غسل کر لیں اس میں صحت و تندرستی بھی ھے اور مرتے وقت حضرت سیدنا جبرائیل علیہ السلام کی زیارت بھی ہو گی
 
```(اچھی مائیں صفحہ 22)```

1⃣4⃣جماع کے فورا بعد پانی پینا صحت کے لیے مفید نہیں لہذا کچھ وقفے کے بعد پانی پی سکتے ہیں

```(بستانل عارفین ، ص ، 138)```

1⃣5⃣طبیب کہتے ہیں کی ہفتے میں دو بار سے زیادہ صحبت کرنا ہلاکت کا باعث ہے شیر کے بارے میں آتا ہے کی وہ اپنی مادہ سے سال میں ایک مرتبہ ہی جماع کرتا ہے اور اسکے بعد اس پر اتنی کمزوری لاحق ہو جاتی ہے اگلے 48 گھنٹے تک وہ چلنے پھرنے کے قابل بھی نہیں رہتا اور 48 گھنٹے کے بعد جب وہ اٹھتا ہے تب بھی لڑکھڑا تا ہے

```(مجربات یوسف ، ص ، 41)```

1⃣6⃣عورت سے حیض کی حالت میں صحبت کرنا جائز نہیں اگر چہ شادی کی پہلی رات ہی کیوں نہ ہو اور اگر  اسکو جائز جانے جب تو کافر ہو جائے گا یوں ہی اسکے پیچھے کے مقام میں صحبت کرنا بھی سخت حرام ہے

```(بہار شریعت ، جلد 2 ، ص ، 78)``` 

1⃣7⃣مباشرت کے بعد حالت جنابت میں یعنی ناپاکی کی حالت میں اور حیض کی حالت میں عورت منحوس اچھوت بھی نہیں ہو جاتی جیسا کی بہت جگہ رواج ہے کہ کھانا بھی نہیں بنانے دیتے برتنوں کو ہاتھ بھی لگانے نہیں دیتے یہ جہالت ہے بلکہ اسکے ساتھ سونے میں بھی حرج نہیں ہاں عورت کا حالت حیض میں اگر شہوت کا خطرہ  ہو تو الگ سوئے

```(فتاویٰ مصطفویہ  جلد  3 ، ص ، 13)```

1⃣8⃣قیامت کے دن سب سے بدتر مرد و عورت وہ ہونگے جو اپنی راز (پردے) کی باتیں اپنے دوستوں کو سناتے ہیں

```(مسلم ، جلد 1 ص ، 464)``` 

1⃣9⃣عورت سے جدا رہنے کی مدت 4 مہینہ ہے اس سے زیادہ دور رہنا منع ہے

```(تاریخ خلفاء ، ص ، 97)```

2⃣0⃣جو بچہ سمجھدار ہو اس کے سامنے صحبت کرنا مکروہ ہے

```(الملفوظ ، حصہ ، ص ، 14)```

مزید تفصیلی معلومات کے لئے ان کتب کا مطالعہ انتہائی ضروری و مفید ہے

1⃣ *خزینہ رحمت*

دعوت اسلامی کا اشاعتی ادارہ مکتبۃ المدینہ 

2⃣ *شادی کا تحفہ*

مکتبہ اعلی حضرت

3⃣ *اچھی مائیں*

ادارہ صراط مستقیم ڈاکٹر اشرف آصف جلالی صاحب دامت برکاتہم عالیہ

4⃣ *تحفہء شادی*

مکتبہ اعلی حضرت

میلاد پبلیکیشنز لاہور داتا دربار

5⃣ *میٹھا زہر*

مکتبہ اعلی حضرت 

6⃣ *قابل رشک خواتین*

مکتبہ اعلی حضرت 

7⃣ *سنت نکاح*

مکتبۃ المدینہ 

8⃣ *شادی خانہ بربادی کے اسباب اور ان کا حل*

مکتبۃ المدینہ دعوت اسلامی کا اشاعتی ادارہ

9⃣ *اولاد کے حقوق*
 
امام اھلسنت اعلیحضرت امام احمد رضا خان رحمۃاللہ علیہ

1⃣0⃣ *پردے کے بارے میں سوال جواب*

مکتبۃالمدینہ

1⃣1⃣ *اسلامی بہنو کی نماز*

مکتبۃالمدینہ 

1⃣2⃣ *کپڑے پاک کرنے کا طریقہ*

مکتبۃالمدینہ

1⃣3⃣ *بہار شریعت حصہ آٹھ8*

مکتبۃالمدینہ

1⃣4⃣ *ہمارے مسائل اور ان کا حل*

مکتبہ اعلی حضرت

1⃣5⃣ *نماز کے احکام*

مکتبۃالمدینہ
 
1⃣6⃣ *کفریہ کلمات کے بارے میں سوال جواب*

مکتبۃالمدینہ
 
1⃣7⃣ *رشدالایمان*

مکتبہ اعلی حضرت

1⃣8⃣ *مدنی پنج سورہ*

مکتبۃالمدینہ

1⃣9⃣ *گھریلو علاج*

مکتبۃالمدینہ

2⃣0⃣ *تجہیز و تکفین کا طریقہ*

مکتبۃالمدینہ

2⃣1⃣ *کالج اور لڑکی*

مفتی فیض احمد اویسی صاحب رحمۃ اللہ علیہ

ادارہ صراطِ مستقیم ڈاکٹر اشرف آصف جلالی صاحب دامت برکاتہم عالیہ
 
ضرور ضرور ضرور لے کر پڑھ لیں تاکہ بےشمار غلط فہمیاں دور کر سکیں گے اور معلومات کا خزانہ ہاتھ میں آئے گا
 
*نوٹ*👇👇👇

یہ پوسٹ تیار کرنے میں تقریباً پانچ گھنٹے.  لگے ہیں آگے شئیر کر کے صدقہ جاریہ کی سعادت حاصل کیجئے اور *مدنی چینل دیکھتے رہئے*

​ *چند نصیحتیں خوشحال زندگی کی ضمانت*


۱- دن کا آغاز نماز فجر، اذکاراور توکل علی الله سے

۲- گناھوں سے مسلسل معافی مانگتے رھیں، گناہ بھی معاف، رزق میں بھی اضافہ ان شاء الله 

۳- دعا نہ چھوڑیں، یہ کامیابی کی کنجی ھے

۴- یاد رکھیں زبان سے نکلے کلمات لکھے جارھے ھیں

۵- سخت آندھیوں میں بھی ا
​​
مید کا دامن نہ چھوٹے

۶- انگلیوں کی خوبصورتی انکے ذریعہ تسبیح کرنے میں ھے

۷- افکار اور غم کی کثرت میں کہیں *لا اله الا الله*

۸- روپے پیسے دے کر فقیروں اور مسکینوں کی دعا خرید لیں

۹۔ خشوع اور اطمینان سے کیا گیا سجدہ زمین بھر سونے سے بھی بہتر ھے، اسکی قدر کریں

۱۰- زبان سے کوئی لفظ نکالتے ہوئے سوچیں اسکے اثرات کیا ہونگے، ایک لفظ بعض اوقات مہلک ہو جاتا ھے

۱۱- مظلوم کی *بدعا* اور محروم کی *آہ* سے بچیں

۱۲- اخبار و رسائل بینی سے پہلے کچھ تلاوتِ قرآن کرلیں

۱۳- آپ اپنی اصلاح کی فکر کریں آپکا گھرانہ بھی آپکے راستہ پر چلے گا

۱۴- آپکا نفس برائی کی طرف بلاتا ھے، اسکو نیکی میں لگا کر مقابلہ کریں

۱۵- والدین کی قدر کیجئے انکو نعمت عظمی سمجھیں، رضائے الہی کا قریبی سبب ھے

۱۶- آپکے پرانے کپڑے غریبوں کے لیے نئے ہیں

۱۷- زندگی انتہائی مختصر ہے غصہ نہ کریں، کسی سے بغض نہ رکھیں، رشتہ داریوں اور تعلقات کو خراب نہ کریں

۱۸- آپکو سب سے زیادہ طاقت والے اور سب سے بڑے مالدار کا ساتھ حاصل ہے (یعنی الله سبحانہ و تعالی کا) اسپر اعتماد کریں اور خوش رہیں 

۱۹- گناہوں سے اپنے لیے دعا کی قبولیت کا دروازہ بند نہ کریں 

۲۰- مصیبتوں، مشقتوں حتٰی کے ذمہ داریوں کے نبھانے میں نماز آپکی مددگار ہے، اسکا سہارہ لیں

۲۱- بدگمانی سے بچیں، دوسروں کو بھی راحت پہنچائیں اور خود بھی راحت میں رہیں

۲۲- تمام فکروں اور غموں کا سبب اپنے رب سے دوری ہے، اس دوری کو ختم کردیں

۲۳- نماز کا اھتمام کریں، قبر میں یہی ساتھ جائیگی 

۲۴- غیبت کریں نہ سنیں، کوئی کررھا ہو تو اسکو بھی روکیں

۲۵- سورۃ الملک کی تلاوت نجات کا باعث ھے

۲۶- خشوع سے خالی نماز، آنسو سے خالی آنکھیں محرومی ھے، اس محرومی سے نکلیں 

۲۷۔ دوسروں کو تکلیف دینے سے بہت بچیں

۲۹- تمام تر محبت الله ﷻ اور رسول الله ﷺ  کے لیے
اور مخلوق کے لیے اچھا اخلاق 

۳۰- جو آپکی غیبت کرے اسکو معاف کر دیں وہ تو خود اپنی نیکیاں آپکی نذر کر رھا ھے 

۳۱- نماز، تلاوت اور ذکر چہرے کا نور، دل کا چین اور مزید نیک اعمال کی توفیق کا ذریعہ ھے

۳۲- جو جہنم کی آگ یاد رکھے، گناہ سے بچنا اسکے لیے آسان ہو جائے گا

۳۳- جب رات ھمیشہ نہیں رھتی تو غم پریشانی کے بادل بھی چھٹ جائیں گےاور تنگی آسانی سے بدل جائیگی 

۳۴- بحث مباحثہ چھوڑیئے
بڑے بڑے کام کرنے کو پڑے ھیں 

۳۵- نماز اطمینان سے ادا کریں باقی سارے کام اس سے بہت کم اہمیت کے ہیں

۳۶- قرآن تک ہر وقت رسائی رکھیں، ایک آیت کی تلاوت بھی دنیا ومافیہا سے بہتر ھے

۳۷- زندگی کی خوبصورتی ایمان کے بغیر نہیں 

آخر مردہ یہ تمنا کیوں کریگا کہ وہ واپس آکر صدقہ کرے اس لیے کہ وہ صدقہ کا فائدہ دیکھ لیگا۔ صدقہ کریں، مومن قیامت کے دن اپنے صدقہ کے سائے میں ھوگا۔ 

بہت ممکن ہے پڑھنے والا لکھنے اور بھیجنے والے سے زیادہ عمل کرلے ان شاء الله 
جزاک الله خیرًا واحسن الجزا

Food for Knee Pains, Lower Back Pains

إِنَّ رَبَّكُمُ اللّهُ الَّذِي خَلَقَ السَّمَاوَاتِ وَالأَرْضَ فِي سِتَّةِ أَيَّامٍ ثُمَّ اسْتَوَى عَلَى الْعَرْشِ يُغْشِي اللَّيْلَ النَّهَارَ يَطْلُبُهُ حَثِيثًا وَالشَّمْسَ وَالْقَمَرَ وَالنُّجُومَ مُسَخَّرَاتٍ بِأَمْرِهِ أَلاَ لَهُ الْخَلْقُ وَالأَمْرُ تَبَارَكَ اللّهُ رَبُّ الْعَالَمِينَ

Kheer for ARTHRITIS

We have given this recipe to may patients of Osteo Arthritis, Rheumatoid Arthritis, Knee joint pain, lower back pain, etc. & Masha'Allah that within 30 days, they felt relief & in addition, the Kheer provides energy & improves bone density. Regardless of joint pains, the Kheer is good for anyone, best for women who feel lethargic & week after working at the house, it will be perfect as well after delivering a child.

Take 50 grams each of the following (they have all the necessary minerals, vitamins, proteins & healthy fats) :

1. Flaxseeds (Alsi ~ Kattaan key beej)

2. Lotus Seeds (Phool Makhanay)

3. Sesame seeds (Till)

4. Almonds (Badaam)

5. Chahar Maghaz (seeds of melon, watermelon, Gourd & Cucumber)

6. Gum Acacia (Goond Babool / Goond Keekar)

Roast the first five (except Gum) for 10 minutes at low heat, when they cool down, grind all the ingredients (including gum), seeds should be fresh otherwise you will have a bitter taste. Keep the ground mixture air tight in a freezer so that it stays crispy.

Boil 3-4 tablespoons of the mixture in 250 ml of milk, when still hot, pour in a bowl / cup & sweeten with honey, that is all. Best is to take it in breakfast & you may also add 2 tablespoons of Barley's Sattu (Saweeq) for a Talbinah. And depending upon your body's ability to absorb the nutrients, take it at alternative days.


You will be pleased by the energy & strength this Kheer will provide.

Source of Article


Signs of Weak Faith & How to Improve It

Signs of weak Faith :

 

·  Committing Sins And Not Feeling Any Guilt.

·  Having A Hard Heart (no sign of mercy and petty when it comes to own benefit/loss).

·  Being Materialistic too much.

·  Feeling Too Lazy To Do Good Deeds, e.g. Being Late For Salat

·  No Desire To Read The Quran.

·  Neglecting The Sunnah.

·  Having Mood Swings, For instance Being Upset about petty things and bothered and irritated most of the time.

·  Not feeling anything when hearing verses from the Quran, for example when Allah warns us of punishments and His promise of glad tidings.

·  Finding difficulty in remembering Allah and making dhikr.

·  Not feeling bad when things are done against the Shariah.

·  Desiring status and wealth too much.

·  Being mean and miserly, i.e. not wanting to part with wealth.

·  Feeling pleased when things are not progressing for others.

·  Not concerned with whether something is haram or halal. 

·  Making fun of people who do simple good deeds, like cleaning the mosque.

·  Not feeling concerned about the situation of Muslims.

·  Not feeling the responsibility to do something to promote Islam.

·  Becoming engrossed and very involved with dunya, worldly things, i.e. feeling bad only when losing something in terms of material wealth.

·  Becoming engrossed and obsessive about ourselves.

 

How To increase Our Faith Then ?

 

·  Remember death and qabr regularly.

·  Do more and more zikr (rememberence of Allah swt).

·  Think of Allah's and Prophet's pleasure in every action we do.

·  Recite and ponder on the meanings of the Quran. Tranquility then descends and our hearts become soft. To get optimum benefit, remind yourself that Allah is speaking to you. People are described in different categories in the Quran; think of which one you find yourself in.

·  Realize the greatness of Allah. Everything is under His control. There are signs in everything we see that points us to His greatness. Everything happens according to His permission. Allah keeps track and looks after everything, even a black ant on a black rock on a black moonless night.

·  Make an effort to gain knowledge, for at least the basic things in daily life e.g. how to make wudu properly. Know the meanings behind Allah's names and attributes. People who have taqwa are those who have knowledge.

·  Attend gatherings where Allah is remembered. In such gatherings we are surrounded by angels.

·  We have to increase our good deeds. One good deed leads to another good deed. Allah will make the way easy for someone who gives charity and also make it easy for him or her to do good deeds. Good deeds must be done continuously, not in spurts.

·  Remember the different levels of akhirah, for instance when we are put in our graves, when we are judged, whether we will be in paradise or hell.

·  Make dua, realize that we need Allah. Be humble. Don't covet material things in this life.

·  Our love for Subhana Wa Ta'Ala must be shown in actions. We must hope Allah will accept our prayers, and be in constant fear that we do wrong. At night before going to sleep, we must think about what good we did during that day and sins we committed. (gheebat, lie, back biting, etc)

·  Realize the effects of sins and disobedience- one's faith is increased with good deeds and our faith is decreased by bad deeds. Everything that happens is because Allah wanted it. When calamity befalls us- it is also from Allah. It is a direct result of our disobedience to Allah.